وفاقی کابینہ نے جمعرات کو ملک میں پیٹرولیم کی تلاش کی سرگرمیوں کی بحالی

تاجکستان کے ساتھ ٹرانزٹ ٹریڈ کی راہ میں حائل رکاوٹ کو دور کر دیا

اور تباہ کن سیلاب سے متعلق “پوسٹ ڈیزاسٹر نیڈز اسیسمنٹ (PDNA)

رپورٹ حاصل کی۔

Cap lifted on oil exploration work in 11 blocks|Breaking News|URDUVILA NEWS

وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت کابینہ کا اجلاس ہوا

جس میں پیٹرولیم ڈویژن کی سفارش پر 11 پیٹرولیم ایکسپلوریشن لائسنس بحال

کرنے کی منظوری دی گئی۔ اس فیصلے سے ملک میں تلاشی کی سرگرمیوں کی راہ ہموار ہوگی۔

میڈیا رپورٹس میں دعویٰ کیا گیا ہے

کہ حکومت نے وزارت قانون کی طرف سے قانونی منظوری کے بعد منسوخ شدہ لائسنسوں

کو عدالت سے باہر تصفیہ کے طور پر بحال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

قواعد کے تحت، حکومت پیٹرولیم کی تلاش کے لیے خصوصی لائسنس دیتی ہے

عام طور پر کام کے پروگرام / یونٹس کے خلاف مسابقتی بولی کے عمل کے ذریعے پانچ سال کی ابتدائی مدت کے لیے۔

کابینہ نے تاجکستان کے ساتھ ٹرانزٹ ٹریڈ کی منظوری دے دی۔

آفت کے بعد کی ضروریات کی تشخیص کی رپورٹ پیش کی گئی۔

قواعد حکومت یا متعلقہ حکام کو ایسے لائسنسوں کو منسوخ کرنے کا اختیار دیتے ہیں

اگر ان کے ہولڈرز لائسنس کی کسی بھی مادی شرائط و ضوابط کی خلاف ورزی کرتے ہیں

بشمول مقررہ وقت کے دوران پرعزم کام کے پروگرام کی عدم کارکردگی کے ساتھ ساتھ

مالی ذمہ داریوں کی عدم تکمیل جیسے کہ سماجی بہبود، تربیت، کرایہ، اور پیداوار بونس۔

اطلاعات کے مطابق یہ لائسنس کام کے عزم کو پورا نہ کرنے

اور مالی ذمہ داریوں کی عدم ادائیگی کی وجہ سے منسوخ کیے گئے تھے۔

تمام 11 بلاکس کے لیے متعلقہ سول عدالتوں اور اسلام آباد اور سندھ ہائی کورٹس نے جمود کا حکم دیا تھا۔

تاہم، قانونی چارہ جوئی کرنے والی کمپنیوں نے حکومت سے رابطہ کیا

اور دیئے گئے بلاکس کی تلاش میں دلچسپی ظاہر کی۔

منسوخ شدہ بلاکس میں کئے گئے کام اور قانونی چارہ جوئی کرنے والی

کمپنیوں کی بقایا ذمہ داریوں کا خلاصہ حال ہی میں وزارت پٹرولیم کی طرف سے پیش کیا گیا تھا۔

پی ڈی این اے رپورٹ

وزیر اعظم آفس کے مطابق

وزارت منصوبہ بندی نے 2022 کے سیلاب کے تناظر میں پی ڈی این اے رپورٹ پیش کی۔

یہ رپورٹ وزارت منصوبہ بندی نے ورلڈ بینک، ایشیائی ترقیاتی بینک

یورپی یونین، اقوام متحدہ، تمام صوبوں کی حکومتوں، گلگت بلتستان

آزاد جموں و کشمیر، سول سوسائٹی، تعلیمی اداروں اور این جی اوز کے تعاون سے تیار کی ہے۔

کابینہ کو بتایا گیا کہ پی ڈی این اے رپورٹ درمیانی تا طویل المدتی

منصوبوں کی حمایت کرے گی جن کا مقصد سیلاب سے متاثرہ علاقوں

کی آب و ہوا میں لچکدار انداز میں تعمیر نو کرنا ہے۔

وزیر اعظم نواز شریف نے ’’تحفظ، بحالی، تزئین و آرائش اور بحالی کے

منصوبے‘‘ کو جلد از جلد مکمل کرنے کی ہدایات جاری کیں۔

انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں تمام صوبوں

اور دیگر اسٹیک ہولڈرز کی رائے کو مدنظر رکھا جائے۔

ٹرانزٹ ٹریڈ معاہدہ

کابینہ نے وزارت تجارت کی سفارش پر پاکستان اور تاجکستان کے

درمیان ٹرانزٹ ٹریڈ معاہدے پر دستخط کی منظوری دی۔

اس معاہدے پر تاجکستان کے صدر کے متوقع دورہ پاکستان کے

دوران دستخط کیے جانے کا امکان ہے۔ دورے کی تاریخ کا اعلان ہونا ابھی باقی ہے۔

قبل ازیں وزیراعظم نے مخیر حضرات سے اپیل کی کہ وہ سیلاب زدگان کے لیے

مکانات کی تعمیر کی نقل تیار کرکے حکومت کی کوششوں میں تعاون کریں۔

وہ یہاں ٹانک اور ڈیرہ اسماعیل خان میں سیلاب زدگان کے لیے پہلے

سے تیار شدہ رہائشی یونٹس کے اجراء کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔

وزیر اعظم نے امیروں پر زور دیا کہ وہ بلوچستان اور سندھ کے

سیلاب زدہ لوگوں کو ضروری سہولیات سے آراستہ انفراسٹرکچر فراہم کرکے انہیں ’اپنانے‘ لیں۔

مسٹر شریف

جنہوں نے 100 رہائشی یونٹس کی چابیاں سیلاب متاثرین کے حوالے کیں،

اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ دو کمروں، ایک کچن اور ایک بیت الخلا پر

مشتمل رہائش بے گھر لوگوں کو راحت فراہم کرے گی۔

Cap lifted on oil exploration work in 11 blocks|Breaking News|URDUVILA NEWS

For latest Government And Private Jobs in All Over Paksitan: Click Here

Cap lifted on oil exploration work in 11 blocks|Breaking News|URDUVILA NEWS

Cap lifted on oil exploration work in 11 blocks|Breaking News|URDUVILA NEWS

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *